یہاں کچھ رہا ہو تو ہم منہ دکھائیں

شمشیر بہادر سنگھ

یہاں کچھ رہا ہو تو ہم منہ دکھائیں

شمشیر بہادر سنگھ

MORE BYشمشیر بہادر سنگھ

    یہاں کچھ رہا ہو تو ہم منہ دکھائیں

    انہوں نے بلایا ہے کیا لے کے جائیں

    کچھ آپس میں جیسے بدل سی گئی ہے

    ہماری دعائیں تمہاری بلائیں

    تم ایک خواب تھے جس میں خود کھو گئے ہم

    تمہیں یاد آئیں تو کیا یاد آئیں

    وہ اک بات جو زندگی بن گئی ہے

    جو تم بھول جاؤ تو ہم بھول جائیں

    وہ خاموشیاں جن میں تم ہو نہ ہم ہیں

    مگر ہیں ہماری تمہاری صدائیں

    بہت نام ہیں ایک شمشیرؔ بھی ہے

    کسے پوچھتے ہو کسے ہم بتائیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے