ایسا ہوا کہ آج پھر آئے وہ خواب میں

محمد یوسف پاپا

ایسا ہوا کہ آج پھر آئے وہ خواب میں

محمد یوسف پاپا

MORE BYمحمد یوسف پاپا

    ایسا ہوا کہ آج پھر آئے وہ خواب میں

    یہ خاکسار رہ گیا الجھا حساب میں

    جس دن سے بن گیا ہوں میں ہڈی کباب میں

    وہ شوخ پڑ گیا ہے عجب پیچ و تاب میں

    دل کے بجائے کیسے وہ پہلو میں آ گیا

    اے شیخ جی پڑھا یہ سبق کس کتاب میں

    اتنا صریح ان کی نگاہوں کا تھا سوال

    میں ہڑبڑا کے رہ گیا ان کے جواب میں

    لب پر ہے کچھ زباں پہ ہے کچھ پیٹ میں ہے کچھ

    اب کیا کہوں میں ان کی محبت کے باب میں

    مآخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY