ہم کو اب بھی نہر پر جا کر نہانا یاد ہے

حاتم بھٹی

ہم کو اب بھی نہر پر جا کر نہانا یاد ہے

حاتم بھٹی

MORE BYحاتم بھٹی

    ہم کو اب بھی نہر پر جا کر نہانا یاد ہے

    ہاتھ میں کپڑے اٹھا کر بھاگ جانا یاد ہے

    کھینچنا کرسی کا اپنا ان کا گرنا شان سے

    ماسٹر کا پھر ہمیں مرغا بنانا یاد ہے

    سینڈلوں اور جھاڑوؤں سے روز مجھ کو جھاڑنا

    مجھ سے جاناں پیار تیرا والہانہ یاد ہے

    تیری صورت دیکھتے ہی میرا ڈر کر چیخنا

    اور تیرا پھر ڈرانا پھر ڈرانا یاد ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY