جو بھی تیرے قریب ہو جائے

محمد یوسف پاپا

جو بھی تیرے قریب ہو جائے

محمد یوسف پاپا

MORE BYمحمد یوسف پاپا

    جو بھی تیرے قریب ہو جائے

    اس کی صورت عجیب ہو جائے

    دل کا میدان ناپنے کے لیے

    وہ سراپا جریب ہو جائے

    حب الفت کرے کوئی ایجاد

    دشمن جاں حبیب ہو جائے

    نبض بھی دیکھے حال بھی پوچھے

    کاش دلبر طبیب ہو جائے

    بھوک کا کچھ اسے بھی ہو احساس

    وہ ستم گر ادیب ہو جائے

    گفتگو کے یہ نقرئی جھٹکے

    باؤلا بھی خطیب ہو جائے

    مآخذ

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY