تجھے مجھ سے مجھ کو تجھ سے جو بہت ہی پیار ہوتا

انور مسعود

تجھے مجھ سے مجھ کو تجھ سے جو بہت ہی پیار ہوتا

انور مسعود

MORE BYانور مسعود

    تجھے مجھ سے مجھ کو تجھ سے جو بہت ہی پیار ہوتا

    نہ تجھے قرار ہوتا نہ مجھے قرار ہوتا

    ترا ہر مرض الجھتا مری جان ناتواں سے

    جو تجھے زکام ہوتا تو مجھے بخار ہوتا

    جو میں تجھ کو یاد کرتا تجھے چھینکنا بھی پڑتا

    مرے ساتھ بھی یقیناً یہی بار بار ہوتا

    کسی چوک میں لگاتے کوئی چوڑیوں کا کھوکھا

    ترے شہر میں بھی اپنا کوئی کاروبار ہوتا

    غم و رنج عاشقانہ نہیں کیلکولیٹرانہ

    اسے میں شمار کرتا جو نہ بے شمار ہوتا

    وہاں زیر بحث آتے خط و خال و خوئے خوباں

    غم عشق پر جو انورؔ کوئی سیمینار ہوتا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY