یا رب مرے نصیب میں اکل حلال ہو

دلاور فگار

یا رب مرے نصیب میں اکل حلال ہو

دلاور فگار

MORE BYدلاور فگار

    یا رب مرے نصیب میں اکل حلال ہو

    کھانے کو قورمہ ہو کھلانے کو دال ہو

    لے کر برات کون سپر ہائی وے پہ جائے

    ایسی بھی کیا خوشی کہ سڑک پر وصال ہو

    جلدی میں منہ سے لفظ جمالو نکل گیا

    کہنا یہ چاہتا تھا کہ تم مہ جمال ہو

    عورت کو چاہئے کہ عدالت کا رخ کرے

    جب آدمی کو صرف خدا کا خیال ہو

    اک بار ہم بھی راہنما بن کے دیکھ لیں

    پھر اس کے بعد قوم کا جو کچھ بھی حال ہو

    ہم تو کسی سے بھیک نہیں مانگتے فگارؔ

    لیکن اگر فقیر کی صورت سوال ہو

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    یا رب مرے نصیب میں اکل حلال ہو نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY