aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

بادۂ عشق سے سرشار گرو نانک تھے

شیام سندر لال برق

بادۂ عشق سے سرشار گرو نانک تھے

شیام سندر لال برق

MORE BYشیام سندر لال برق

    بادۂ عشق سے سرشار گرو نانک تھے

    عابد و زاہد و دیں دار گرو نانک تھے

    رہ تاریک ضلالت میں پئے خلق خدا

    شمع سا مظہر انوار گرو نانک تھے

    حق پرستی کے تصور سے ہمیشہ خوش تھے

    کفر اور شرک سے بیزار گرو نانک تھے

    تربیت خلق کی کرتے تھے بڑی کوشش سے

    اس کے ہر حال میں غم خوار گرو نانک تھے

    ابر نیساں کا خواص ان کی نصیحت میں تھا

    لب شیریں سے گہر بار گرو نانک تھے

    واصل‌ منزل مقصود نہ ہوتے کیوں کر

    فرس عشق پہ اسوار گرو نانک تھے

    راہ حق میں نہ تھے پابند کسی مذہب کے

    تارک سبحہ و زنار گرو نانک تھے

    خواب غفلت سے وہ بیدار کیا کرتے تھے

    واعظوں میں بڑے ہوشیار گرو نانک تھے

    مدح خواں اس کا تو ہو برقؔ بصد عجز و نیاز

    خاکساروں کے مددگار گرو نانک تھے

    مأخذ:

    Jalwa-e-Barq (Pg. e-152 p-150)

    • مصنف: شیام سندر لال برق
      • اشاعت: 1929
      • ناشر: مصباح پریس، سیتاپور
      • سن اشاعت: 1929

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے