نظم

MORE BYزاہد ڈار

    میں ستاروں اور درختوں کی خاموشی کو سمجھ سکتا ہوں

    میں انسانوں کی باتیں سمجھنے سے قاصر ہوں

    میں انسانوں سے نفرت نہیں کرتا

    میں ایک عورت سے محبت کرتا ہوں

    میں دنیا کے راستوں پر چلنے سے معذور ہوں

    میں اکیلا ہوں

    میں لوگوں میں شامل ہونا نہیں چاہتا

    میں آزاد رہنا چاہتا ہوں

    میں خوش رہنا چاہتا ہوں

    میں محبت کے بغیر خوش نہیں رہ سکتا

    میں ایک عورت کی محبت کا بھوکا ہوں

    میں ایک عورت کی محبت نہیں پا سکا

    میں تنہائی سے نکلنے کا راستہ نہیں پا سکا

    میں دکھ میں مبتلا ہوں

    میں ایک عورت کو سمجھنے سے قاصر ہوں

    میں خاموشی کی آوازوں کو سمجھ سکتا ہوں

    مآخذ:

    • کتاب : Saweera (magazine-56 (Pg. 54)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY