آؤ چلو اسکول چلیں ہم

مشیر جھنجھانوی

آؤ چلو اسکول چلیں ہم

مشیر جھنجھانوی

MORE BYمشیر جھنجھانوی

    رات نے باندھا اپنا پرچم

    اب وہ کہاں ظلمت کے دم خم

    حسن مجسم صبح کا عالم

    بچوں میں ہے شور یہ پیہم

    آؤ چلو اسکول چلیں ہم

    رات گئی لے کر اندھیارا

    اب ہے چاروں اور اجالا

    بچوں نے بستوں کو سنبھالا

    سب نے مل کر گیت یہ گایا

    آؤ چلو اسکول چلیں ہم

    امن کی ہم پہچان بنیں گے

    گوتم کا نروان بنیں گے

    بھارت کی ہم شان بنیں گے

    پڑھ لکھ کر انسان بنیں گے

    آؤ چلو اسکول چلیں ہم

    کیوں نہ بنائیں ایسے نقشے

    جن سے دیش میں دولت برسے

    بنجر دھرتی سونا اگلے

    یہ بھی ملے گا علم و عمل سے

    آؤ چلو اسکول چلیں ہم

    کھیتی باڑی دیش کی زینت

    اپنی دھرتی اپنی محنت

    کام سے ہے دنیا میں عزت

    عزت ہے محنت کی بدولت

    آؤ چلو اسکول چلیں ہم

    دیش کے سر کا تاج بنیں گے

    بھارت کی ہم لاج بنیں گے

    کل کے کیوں محتاج بنیں گے

    جو بھی بنیں گے آج بنیں گے

    آؤ چلو اسکول چلیں ہم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY