آوارہ پرچھائیاں

آشفتہ چنگیزی

آوارہ پرچھائیاں

آشفتہ چنگیزی

MORE BYآشفتہ چنگیزی

    سارے دن کی تھکی،

    ویران اور بے مصرف رات کو

    ایک عجیب مشغلہ ہاتھ آ گیا ہے

    اب وہ!

    سارے شہر کی آوارہ پرچھائیوں کو

    جسم دینے کی کوشش میں مصروف ہے

    مجھے معلوم ہے

    اگر گم نام پرچھائیوں کو

    ان کی پہچان مل گئی

    تو شہر کے معزز اور عبادت گزار شریف زادے

    ہم شکل پرچھائیوں کے خوف سے

    پرچھائیوں میں تبدیل ہو جائیں گے

    اور

    بے مصرف دن بھر کی تھکی ہوئی رات کو

    ایک اور مشغلہ مل جائے گا

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    فہد حسین

    آوارہ پرچھائیاں فہد حسین

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY