اداکار

سدریٰ افضل

اداکار

سدریٰ افضل

MORE BYسدریٰ افضل

    مرے راز داں

    میری آنکھوں میں دیکھو

    بتاؤ مجھے کیا کہیں خوف ہے

    کیا کہیں کوئی خواہش

    مچلتی ہوئی پا برہنہ ملی

    کیا مری آنکھ کے بانکپن میں

    نقاہت تو ابھری نہیں

    محبت کا دھاگا جو الجھا ہوا ہے

    کہیں اس کی سرخی تو

    آنکھوں میں دکھتی نہیں

    مرے راز داں

    میری باتوں کو سوچو بتاؤ مجھے

    کیا کہیں ان میں تقدیر سے

    کوئی شکوہ بھی ہے

    کوئی دوغلا پن

    تلفظ کی ''غلطی''

    کہیں نا مرادی کا بے وزن مصرعہ

    شقاوت تنفر بھرا کوئی جملہ

    اگر ایسا ہے تو بتاؤ مجھے

    مرے ڈی این اے میں

    اداکار لمحوں کا پیوند ہے

    مرا فن مسلسل

    ہدایات ہی کا تو پابند ہے

    یہ اک آن میں

    دکھ چھپانے لگے گا

    ملامت زدہ یہ ریاکار چہرا

    ابھی

    دفعتاً مسکرانے لگے گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY