عجب معرکہ

راشد جمال فاروقی

عجب معرکہ

راشد جمال فاروقی

MORE BY راشد جمال فاروقی

    یہ معرکہ بھی عجب ہے

    کہ جس سے لڑتا ہوں

    وہ میں ہی خود ہوں

    رجز مرا

    مرے دشمن کے حق میں جاتا ہے

    جو چل رہے ہیں وہ تیر و تفنگ اپنے ہیں

    جو کاٹتے ہیں وہ سامان جنگ اپنے ہیں

    میں سرخ رو ہوں تو خود اپنے خوں کی رنگ سے

    میں آشنا ہوں

    خود ایذا دہی کی لذت سے

    عجیب جنگ مرے اندروں میں چھڑتی ہے

    مری انا مری بے مائیگی سے لڑتی ہے

    میں بے ضرر ہوں

    بس اپنے سوا سبھی کے لیے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY