علی بن متقی رویا

زبیر رضوی

علی بن متقی رویا

زبیر رضوی

MORE BY زبیر رضوی

    پرانی بات ہے

    لیکن یہ انہونی سی لگتی ہے

    علی بن متقی مسجد کے منبر پر کھڑا

    کچھ آیتوں کا ورد کرتا تھا

    جمعہ کا دن تھا

    مسجد کا صحن

    اللہ کے بندوں سے خالی تھا

    یہ پہلا دن تھا مسجد میں کوئی عابد نہیں آیا

    علی بن متقی رویا

    مقدس آیتوں کو مخملیں جز دان میں رکھا

    امام دل گرفتہ

    نیچے منبر سے اتر آیا

    خلا میں دور تک دیکھا

    فضا میں ہر طرف پھیلی ہوئی تھی

    دھند کی کائی

    ہوا پھر یوں

    منڈیروں گنبدوں پر ان گنت پر پھڑ پھڑائے

    کاسنی کالے کبوتر

    صحن میں نیچے اتر آئے

    وضو کے واسطے رکھے ہوئے لوٹوں پر

    اک اک کر کے آ بیٹھے

    امام دل گرفتہ

    پھر سے منبر پر چڑھا

    جزدان کو کھولا

    صفوں پر اک نظر ڈالی

    یہ پہلا دن تھا مسجد میں

    وضو کا حوض خالی تھا

    صفیں معمور تھیں ساری!

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    زبیر رضوی

    زبیر رضوی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites