بارش ہوتی ہے تو پانی کو بھی لگ جاتے ہیں پاؤں

گلزار

بارش ہوتی ہے تو پانی کو بھی لگ جاتے ہیں پاؤں

گلزار

MORE BYگلزار

    بارش ہوتی ہے تو پانی کو بھی لگ جاتے ہیں پاؤں

    در و دیوار سے ٹکرا کے گزرتا ہے گلی سے

    اور اچھلتا ہے چھپاکوں میں

    کسی میچ میں جیتے ہوئے لڑکوں کی طرح

    جیت کر آتے ہیں جب میچ گلی کے لڑکے

    جوتے پہنے ہوئے کینوس کے اچھلتے ہوئے گیندوں کی طرح

    در و دیوار سے ٹکرا کے گزرتے ہیں

    وہ پانی کے چھپاکوں کی طرح

    مأخذ :
    • کتاب : Chand Pukhraj Ka (Pg. 6)
    • Author : Gulzar
    • مطبع : Roopa And Company (1995)
    • اشاعت : 1995

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے