بچہ اور مرغا

محشر بدایونی

بچہ اور مرغا

محشر بدایونی

MORE BYمحشر بدایونی

    اک بچے نے مرغے سے کہا

    پیارے مرغے یہ شور ہے کیا

    سن سن تیری ککڑوں کوں

    میں سخت پریشاں ہوتا ہوں

    جب تارے چھپتے ہوتے ہیں

    سب چین آرام سے سوتے ہیں

    اس وقت سے تو چلاتا ہے

    کیوں اتنا شور مچاتا ہے

    معلوم ہو آخر بات ہے کیا

    کچھ اپنے دل کا حال بتا

    جا دور مچا یہ شور کہیں

    پڑھنے میں دل لگتا ہی نہیں

    مرغے نے سنا بچے کا بیاں

    بولا نہ ہو ناراض میاں

    تم سب نیند کے ماتے ہو

    سو سو وقت گنواتے ہو

    یہ میں جو شور مچاتا ہوں

    مالک کو پکارے جاتا ہوں

    یہ میری عبادت ہے پیارے

    اللہ کی طاعت ہے پیارے

    میں قہر سے اس کے ڈرتا ہوں

    ہر وقت عبادت کرتا ہوں

    جب صبح کو بانگ میں دیتا ہوں

    اور نام خدا کا لیتا ہوں

    تم کتنے غافل ہوتے ہو

    میں جاگتا ہوں تم سوتے ہو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے