بہت قریب ہو تم

علی سردار جعفری

بہت قریب ہو تم

علی سردار جعفری

MORE BYعلی سردار جعفری

    بہت قریب ہو تم پھر بھی مجھ سے کتنی دور

    کہ دل کہیں ہے نظر ہے کہیں کہیں تم ہو

    وہ جس کو پی نہ سکی میری شعلہ آشامی

    وہ کوزۂ شکر و جام انگبیں تم ہو

    مرے مزاج میں آشفتگی صبا کی ہے

    ملی کلی کی ادا گل کی تمکنت تم کو

    صبا کی گود میں پھر بھی صبا سے بیگانہ

    تمام حسن و حقیقت تمام افسانہ

    وفا بھی جس پہ ہے نازاں وہ بے وفا تم ہو

    جو کھو گئی ہے مرے دل کی وہ صدا تم ہو

    بہت قریب ہو تم پھر بھی مجھ سے کتنی دور

    حجاب جسم ابھی ہے حجاب روح ابھی

    ابھی تو منزل صد مہر و ماہ باقی ہے

    حجاب فاصلہ ہائے نگاہ باقی ہے

    وصال یار ابھی تک ہے آرزو کا فریب

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    بہت قریب ہو تم نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY