بے نوا ہیں کہ تجھے صوت و نوا بھی دی ہے

ادا جعفری

بے نوا ہیں کہ تجھے صوت و نوا بھی دی ہے

ادا جعفری

MORE BYادا جعفری

    بے نوا ہیں کہ تجھے صوت و نوا بھی دی ہے

    جس نے دل توڑ دئے اس کو دعا بھی دی ہے

    وہ جو طوفاں کو سفینہ کبھی ساحل سمجھے

    یورش‌ قطرۂ شبنم سے خفا کیا ہوں گے

    ایک بار اور حساب دل و دلدار کرو

    نقد جاں نذر ہوئی جنس یقیں لے کے چلو

    ھجلہ ناز سے آتے ہیں بلاوے اب کے

    آخری بار چلو آخری دیدار کرو

    مأخذ :
    • کتاب : Gazalan Tum to waqif ho (Pg. 90)
    • Author : Ada Jafri
    • مطبع : Galib Publishers, Lahore (1982)
    • اشاعت : 1982

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY