ڈاکٹر فانچو

رئیس فروغ

ڈاکٹر فانچو

رئیس فروغ

MORE BYرئیس فروغ

    کسی روز میں شہر کے پاگلوں کو ڈنر پر بلاؤں گا

    ان سے کہوں گا کہ

    اے دوستو، دشمنوں، مہربانو، کمینو

    یہ مانا کہ تم کہکشاں کے جراثیم ہو

    اور سب راستے روم ہی کو گئے ہیں

    مگر اب

    اٹالی سے آتی ہوئی اک سڑک کے سپاہی کی سیٹی سنو

    جو کہتی ہے تم مر چکے ہو

    نہیں تو میں چلتی ہوئی کار سے کود کر اپنے بتیس دانتوں

    کو فٹ پاتھ پر

    ڈاکٹر فانچو کے حوالے کردوں گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY