ایک لمحہ

شاہد ماہلی

ایک لمحہ

شاہد ماہلی

MORE BY شاہد ماہلی

    لمحہ

    دل کے بہت پاس سے

    گزرا ہوا صرف ایک لمحہ

    بہا لے گیا ہے

    جانے کتنے خوابوں خواہشوں اور منصوبوں کو

    بچا ہے

    ہڈیوں تک دھنسا ہوا سناٹا

    رکتی ہوئی سانسیں

    ڈوبتی ہوئی نبض

    اور سرد ہوا جسم

    پھر کوئی تیز ہوا کا جھونکا

    ڈھیر ساری گڈمڈ آوازیں

    چیخ ہنسی اور مسکراہٹ

    گھر دفتر بیوی بچے

    اور آئندہ بیس برسوں کا منصوبہ

    بھاگتی ہوئی آڑی ترچھی تصویریں

    ایک کے بعد دوسرے بے ربط مناظر

    اور پھر

    ٹھہر گیا ہے گزرے ہوئے لمحے کا سایہ

    ڈرا ڈرا سہما سہما دل

    اور تھر تھر کانپتا ہوا جسم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY