گاندھی

عرش ملسیانی

گاندھی

عرش ملسیانی

MORE BYعرش ملسیانی

    شہیدوں کا سرتاج جنت مقام

    محبت کی معراج ذی احترام

    غلامان عالم کی پشت و پناہ

    اہنسا کے بندوں کی امید گاہ

    وہ غم بھی وطن کا تھا غم خوار بھی

    رضاکار بھی اور سالار بھی

    اہنسا کا پیرو مگر شیر مرد

    محبت میں یکتا صداقت میں فرد

    ہوا جس کے دم سے بہ صد احتشام

    سیاست سے اونچا صداقت کا نام

    وہ آدم کی عظمت کا آئینہ دار

    وہ ذرہ کہ چمکا تھا خورشید دار

    وہ جس نے دیا آدمیت کو اوج

    وہ جس نے لڑائی اہنسا کی فوج

    قفس ہے کوئی اب نہ صیاد ہے

    وطن جس کی حکمت سے آزاد ہے

    وہ نور ضیا‌ بار سیمائے خیر

    وہ جویاے‌ خیر و شناسائے خیر

    فرشتہ خصال و فرشتہ سیر

    ملک در حقیقت بہ ظاہر بشر

    محبت کی وہ اک شبیہ حسیں

    اخوت کا وہ ایک ماہ مبیں

    وہ حق آگہی کی کچھاروں کا شیر

    صداقت کے میداں کا مرد دلیر

    فلک آفریں اور گردوں طراز

    مریضان پستی کا وہ چارہ ساز

    وہ کوتاہ بینوں کی شمع شعور

    وہ گمراہیوں میں ہدایت کا نور

    وہ جس نے اٹھایا زمانے کا بار

    کیا جس نے جابر کو بے اختیار

    وہ بے مثل قاعد موئثر خطیب

    وہ لشکر میں جس کے امیر و غریب

    وہ جس نے کروڑوں کے کاٹے ہیں بند

    وہ ارفع وہ اعلیٰ وہ سب سے بلند

    وہ جس کی عطا ہے نرالی عطا

    وہ جس نے دیا اک نیا فلسفہ

    زمیں پر بہا اس جری کا لہو

    تفوبر تو اے چرخ گرداں تفو

    مأخذ :
    • کتاب : Kulliyat-e-Arsh (Pg. 296)
    • Author : Arsh Malsiyani
    • مطبع : Ali Imran Chaudhary

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY