گل داؤدی

سدریٰ افضل

گل داؤدی

سدریٰ افضل

MORE BYسدریٰ افضل

    الماری میں پڑے برتنوں کے ساتھ

    ایک عطیہ دان

    جو صدقے کے سکوں سے بھرا پڑا ہے

    آج اس میں چند سکے

    اور ڈال دئے جائیں گے

    تاکہ بلائیں دور رہیں

    لیکن بلاؤں کو دور رکھنا

    اتنا آسان کیسے ہے

    معلوم نہیں

    کیا اندر کی بلاؤں سے

    چھٹکارا پانے کی

    کوئی ایسی آسان تدبیر

    بھی موجود ہے

    شاید گوگل کرنا پڑے

    مگر میں آج عجلت میں

    یہ گرم جوس کا گلاس ہی

    حلق میں انڈیلوں گی اور

    گم شدہ انگوٹھی کو

    پھر سے ڈھونڈنے کی

    کوشش نہیں کروں گی

    کیونکہ وہ مجھے

    بے دھیانی میں

    شیشہ گھورتے ہوئے

    اسی شیلف پر پڑی ملے گی

    جہاں ایک پرانا ٹوتھ برش

    اور ٹوٹی ہوئی

    کنگھی رکھی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY