گم شدہ

شہریار

گم شدہ

شہریار

MORE BYشہریار

    کھردرے جسم کے نشیب و فراز

    جاننے کی ہوس میں جس کی زباں

    اور سب ذائقے بھلا بیٹھی

    وہ نہتا اکیلا رات کے وقت

    ایک دل دوز چیخ کے ہم راہ

    جنگلوں کی طرف گیا تھا کبھی

    اور پھر لوٹ کر نہیں آیا

    اب وہ شاید کبھی نہ آئے گا

    اس کے سائے کی دونوں آنکھیں مگر

    موت سے اس کی بے خبر ہیں ابھی

    اس کی آمد کی منتظر ہیں ابھی

    مآخذ
    • کتاب : sooraj ko nikalta dekhoon (Pg. 244)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY