ہم کو آگے جانا ہے

عطا عابدی

ہم کو آگے جانا ہے

عطا عابدی

MORE BYعطا عابدی

    اپنی منزل پانا ہے

    ہم کو آگے جانا ہے

    رستہ ہے پر خار تو کیا

    چلنا ہے دشوار تو کیا

    آگے ہے دیوار تو کیا

    دیواروں کو ڈھانا ہے

    ہم کو آگے جانا ہے

    اپنی منزل پانا ہے

    علم سے اللہ اور نبی

    علم سے اپنی یہ ہستی

    علم سے دین اور دنیا بھی

    دین اور دنیا پانا ہے

    ہم کو آگے جانا ہے

    اپنی منزل پانا ہے

    امن سے ہم ہیں اور تم بھی

    امن ہے رونق دنیا کی

    امن سے دنیا ہے باقی

    دنیا کو سمجھانا ہے

    ہم کو آگے جانا ہے

    اپنی منزل پانا ہے

    درس ہے یہ ہر چند ادق

    کیوں ہو اس کا ہمیں قلق

    ماضی سے اب لے کے سبق

    مستقبل چمکانا ہے

    ہم کو آگے جانا ہے

    اپنی منزل پانا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Khushboo Khushboo Nazmen Apni (Pg. 38)
    • Author : Ata Abidi
    • مطبع : Book Emporium,Urdu Bazar Sabzi Bagh, Patna (2012)
    • اشاعت : 2012

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY