ایمان

اشفاق حسین

ایمان

اشفاق حسین

MORE BYاشفاق حسین

    اپنے کمزور ایمان کی

    پختگی کے لیے

    اپنے اندھے خیالات کی

    روشنی کے لیے

    اپنے بوسیدہ افکار کی

    تازگی کے لیے

    دھونس سے

    زور سے

    اور بندوق سے

    بے گناہوں کے مقتل سجائے گئے

    نوجوانوں کے شفاف چہروں پہ

    جنگل اگائے گئے

    مدرسے لڑکیوں کے جلائے گئے

    اب انہیں زندہ درگور کرنے کا اک مرحلہ اور ہے

    امن کا

    پیار کا

    بھائی چارے کا

    اخلاص کا

    اور تحمل کا زخمی پرندہ

    آج بندوق کی نالیوں میں پڑا سو رہا ہے

    تذکرہ صرف ایمان کا ہو رہا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY