جواب

MORE BYحمایت علی شاعر

    سورج نے جاتے جاتے بڑی تمکنت کے ساتھ

    ظلمت میں ڈوبتی ہوئی دنیا پہ کی نظر

    کہنے لگا کہ کون ہے اب اس کا پاسباں

    میرے سوا ہے کون زمانے کا راہبر

    میں تھا تو اپنی راہ پہ تھی گامزن حیات

    اب میں نہیں رہوں گا تو یہ ساری کائنات

    ظلمات میں بھٹکتی پھرے گی تمام رات

    سورج یہ کہہ کے جا ہی رہا تھا کہ اک دیا

    چپکے سے جل اٹھا اور اسے دیکھنے لگا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے