جو میرا تمہارا رشتہ ہے

فیض احمد فیض

جو میرا تمہارا رشتہ ہے

فیض احمد فیض

MORE BYفیض احمد فیض

    میں کیا لکھوں کہ جو میرا تمہارا رشتہ ہے

    وہ عاشقی کی زباں میں کہیں بھی درج نہیں

    لکھا گیا ہے بہت لطف وصل و درد فراق

    مگر یہ کیفیت اپنی رقم نہیں ہے کہیں

    یہ اپنا عشق ہم آغوش جس میں ہجر و وصال

    یہ اپنا درد کہ ہے کب سے ہم دم مہ و سال

    اس عشق خاص کو ہر ایک سے چھپائے ہوئے

    ''گزر گیا ہے زمانہ گلے لگائے ہوئے''

    مأخذ :
    • کتاب : Nuskha Hai Wafa (Kulliyat-e-Faiz) (Pg. 711)
    • مطبع : Educational Publishing House (2009)
    • اشاعت : 2009

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY