aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

کالی دھوپ

پاشا رحمان

کالی دھوپ

پاشا رحمان

MORE BYپاشا رحمان

    سورج آج ہمارے آنگن میں

    کالی چادر اوڑھے اترا ہے

    کالی کرنیں

    اس کی رگ رگ سے پھوٹ رہی ہیں

    کس بیدردی سے

    اجیالے کو لوٹ رہی ہے

    کالی دھوپ کے زہر سے آنگن کے

    سارے پتے زرد ہوئے ہیں

    کومل کلیاں سوکھ گئی ہیں

    نیلے پیلے اودے پھول

    کجلائے بے رنگ ہوئے ہیں

    اس کی کالی چادر جب

    اک دن بوسیدہ ہو جائے گی

    جھلکے گا سورج کا مکھڑا

    جو آنگن کو ضو بخشے گا

    ہر دیپک کو لو بخشے گا

    مأخذ:

    نشاط کرب (Pg. 41)

    • مصنف: پاشا رحمان
      • ناشر: اردو اکیڈمی سندھ، کراچی
      • سن اشاعت: 1978

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے