خواب

MORE BYخالد ملک ساحل

    بہت دنوں سے اداس ہے دل

    بہت دنوں سے میں رو رہا ہوں

    مرا اثاثہ تو خواب تھے پر

    میں گہری نیندوں میں سو رہا ہوں

    میں ایک کردار بن گیا ہوں

    میں داستانوں میں کھو رہا ہوں

    یہ کیسا موسم ہے میرے دل میں

    گلوں میں کانٹے پرو رہا ہوں

    میں صاف ستھرا لباس لے کر

    گلی کے پانی سے دھو رہا ہوں

    میں اپنی حیرت کی کھوج میں تھا

    میں گہری نیندوں میں سو رہا ہوں

    بہت دنوں سے اداس ہے دل

    بہت دنوں سے میں رو رہا ہوں

    کوئی تو زرخیز خواب مالک!

    میں خشک لفظوں کو بو رہا ہوں!

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY