کوئی بات نہیں

شمس الرحمن فاروقی

کوئی بات نہیں

شمس الرحمن فاروقی

MORE BYشمس الرحمن فاروقی

    دانت بڑے ہوں

    تو بھی کوئی بات نہیں

    کان کھڑے ہوں

    تو بھی کوئی بات نہیں

    ڈانٹ پڑی ہو

    تو بھی کوئی بات نہیں

    دھوپ کڑی ہو

    تو بھی کوئی بات نہیں

    ادھم بڑا ہو

    تو بھی کوئی بات نہیں

    کوئی لڑا ہو

    تو بھی کوئی بات نہیں

    بچوں کا گھر میں آنے دو

    دھومیں ان کو مچانے دو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY