میرے اسکول

منور رانا

میرے اسکول

منور رانا

MORE BY منور رانا

    میرے اسکول مری یادوں کے پیکر سن لے

    میں ترے واسطے روتا ہوں برابر سن لے

    تیرے استادوں نے محنت سے پڑھایا ہے مجھے

    تیری بینچوں نے ہی انسان بنایا ہے مجھے

    نا تراشیدہ سا ہیرا تھا تراشا تو نے

    ذہن تاریک کو بخشا ہے اجالا تو نے

    علم کی جھیل کا تیراک بنایا ہے مجھے

    خوف کو چھین کے بے باک بنایا ہے مجھے

    تجھ سے شفقت بھی ملی تجھ سے محبت بھی ملی

    دولت علم ملی مجھ کو شرافت بھی ملی

    شفقتیں ایسی ملی ہیں مجھے استادوں کی

    پرورش کرتا ہو جیسے کوئی شہزادوں کی

    تیری چاہت میں میں اس درجہ بھی کھو جاتا تھا

    تیری بینچوں پہ ہی کچھ دیر کو سو جاتا تھا

    مآخذ:

    • کتاب : Shahdaba (Pg. 119)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY