مجھے بارش سے کہنے دو

دعا علی

مجھے بارش سے کہنے دو

دعا علی

MORE BY دعا علی

    مجھے بارش سے کہنے دو جواں جذبوں میں بہنے دو

    کہ جب بارش برستی ہے ہوائیں سرد چلتی ہیں

    مجھے وہ یاد آتے ہیں

    مرے آنسو بہاتے ہیں

    مجھے بارش سے کہنے دو

    جواں جذبوں میں بہنے دو

    مجھے وہ رات کا منظر

    ابھی تک یاد ہے صاحب

    کھلی چھت پر تمہارے سنگ رہ کر بھیگ جانا بھی

    مجھے بارش سے کہنے دو

    جواں جذبوں میں بہنے دو

    تمہاری بانہوں کی نرمی بھی

    تمہاری سانسوں کی گرمی بھی

    مجھے جب یاد آتی ہے

    بہت آنسو رلاتی ہے

    مجھے بارش سے کہنے دو

    کہ تم تنہا نہیں آنا

    مرا محبوب بھی لانا

    میں اس کے ساتھ کھیلی ہوں

    بنا اس کے اکیلی ہوں

    جواں جذبوں میں بہنے دو

    مجھے بارش سے کہنے دو

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY