نیا افق

شہریار

نیا افق

شہریار

MORE BYشہریار

    کیا تم کو یہ پتہ ہے

    اے ناسمجھ رفیقو

    روز ازل سے جس پر

    تم گامزن رہے ہو

    وہ راستہ خلا کی

    سرحد سے جا ملا ہے

    مشعل جلاؤ دیکھو

    بپھری ہوئی ہوا میں

    آئینۂ صدا میں

    چہرہ کسی افق کا

    پھر سے ابھر رہا ہے

    مآخذ
    • کتاب : sooraj ko nikalta dekhoon (Pg. 191)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY