پھول چاند گیت

علقمہ شبلی

پھول چاند گیت

علقمہ شبلی

MORE BYعلقمہ شبلی

    INTERESTING FACT

    (ماہنامہ مسرت ، پٹنہ، مئی 1968)

    ہیں شگوفے ننھے ننھے

    پھول لیکن

    ہم بنیں گے ایک دن

    پھول بن کر مسکرانا

    ہم سکھائیں گے جہاں کو دوستو

    ہیں ستارے ننھے ننھے

    چاند لیکن

    ہم بنیں گے ایک دن

    چاند بن کر جگمگانا

    ہم سکھائیں گے زمیں کو دوستو

    بول ہیں ہم ننھے ننھے

    گیت لیکن

    ہم بنیں گے ایک دن

    گیت بن کر دل پہ چھانا

    ہم سکھائیں گے جہاں کو دوستو

    پھول

    چاند

    گیت

    زندگی کے ہیں نشاں

    ہم بنیں گے اس نشاں کے پاسباں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY