قومی گیت

آرزو لکھنوی

قومی گیت

آرزو لکھنوی

MORE BYآرزو لکھنوی

    اے ماں اے ماں تجھ کو سلام بھارت ماتا کو پرنام

    تو تو کیسی پیاری ماں ہے

    سب ماؤں سے اچھی ماں ہے

    لاڈ اٹھانے والی ماں ہے

    اپنی ماں ہے اپنی ماں ہے

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    تیری مانگ میں گنگا جل ہے

    بھرا پرا تیرا آنچل ہے

    ہریالی ہے پھول ہے پھل ہے

    تیری گود سکھ منڈل ہے

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    سب سے اونچے پربت والی

    سب سے بڑھ کر شوکت والی

    سب سے بھاری دولت والی

    عزت والی عظمت والی

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    تیری چھاتی دھرم سمندر

    جس کی موجیں مسجد مندر

    دونوں کی ہے گونج برابر

    اللہ اللہ ایشور ایشور

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    ہندو مسلم گورے کالے

    پریم کی دارو کے متوالے

    سب ہیں تیری گود کے پالے

    سب ہیں بات پہ مرنے والے

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    تیرے دودھ کی سب میں طاقت

    الفت عزت ہمت جرأت

    تیری دعائیں فتح و نصرت

    تیرے پاؤں کے نیچے جنت

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    اب تو لٹیرے تجھ کو لوٹیں

    بے بھگتے بھگتان نہ چھوٹیں

    ہاتھ میں دھن ہو بازو ٹوٹیں

    گھور کے دیکھیں آنکھیں پھوٹیں

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    تجھ سے آشیرباد جو پائیں

    آرزو ایسے بھی تن جائیں

    بجلی بن کر آفت ڈھائیں

    دور ہوں پھر تو ساری بلائیں

    ماتا کو پرنام اے ماں اے ماں تجھ کو سلام

    اے ماں اے ماں تجھ کو سلام بھارت ماتا کو پرنام

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY