aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

قیامت

خدیجہ خان

قیامت

خدیجہ خان

MORE BYخدیجہ خان

    سنتے تھے

    گناہوں کی انتہا

    زمیں پر حد سے

    جب بڑھ جائے گی

    تو قیامت

    برپا ہوگی

    برسے گی آگ

    آئے گا سیلاب

    قدرت کا قہر

    نازل ہوگا

    اللہ رحم کرے

    آج اس ہولناک دور سے

    گزر رہے ہیں ہم

    جہاں

    زمیں کے ہر خطے میں

    ٹکڑوں ٹکڑوں میں

    زندگی ہو رہی ہے تباہ

    کہیں جنگ کہیں وحشت

    کہیں بھوک کہیں دہشت

    گونجتے دھماکے

    بہتے دریا لہو کے

    موت کے قہقہے

    یہاں سے وہاں تلک

    زہریلی فضاؤں میں

    بے بسی ہی بے بسی

    گویا سب کچھ

    اپنے اختیار سے بے قابو

    اب اور کس شکل میں آئے گی قیامت

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے