رات کا تاج

قمر جمیل

رات کا تاج

قمر جمیل

MORE BYقمر جمیل

    شہر کی گلیوں کے روشن زاویے

    رات کی تنہائیوں کے ہم سفر

    آسماں کے نیلے نیلے حاشیے

    چاند کی رعنائیوں کے نوحہ گر

    تیرگی لپٹی ہوئی دیوار سے

    صبح کی تابانیوں کی منتظر

    راستوں کے پیچ و خم بازار سے

    لوٹ کر آئے ہوں جیسے بار بار

    ایک ویرانی ہے میری غم گسار

    کچھ سیہ کچھ سرخ کچھ خاکستری

    رنگ کے کتوں پہ اجلی دھاریاں

    جن کی شریانوں میں شوریدہ سری

    اور دریوزہ گری کا امتزاج

    یہ سماں اور رات کی جادوگری

    چاند کا لے کر چلی ہاتھوں میں تاج

    مأخذ :
    • کتاب : khvaab numaa (Pg. 22)
    • Author : qamar jameel

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY