سائے کی خاموشی

سارا شگفتہ

سائے کی خاموشی

سارا شگفتہ

MORE BY سارا شگفتہ

    سائے کی خاموشی صرف زمین سہتی ہے

    کھوکھلا پیڑ نہیں یا کھوکھلی ہنسی نہیں

    اور پھر انجان اپنی انجانی ہنسی میں ہنسا

    قہقہے کا پتھر سنگریزوں میں تقسیم ہو گیا

    سائے کی خاموشی

    اور پھول نہیں سہتے

    تم

    سمندر کو لہروں میں ترتیب مت دو

    کہ تم خود اپنی ترتیب نہیں جانتے

    تم

    زمین پہ چلنا کیا جانو

    کہ بت کے دل میں تمہیں دھڑکنا نہیں آتا

    RECITATIONS

    عذرا نقوی

    عذرا نقوی

    عذرا نقوی

    Saaye ki khamoshi عذرا نقوی

    مآخذ:

    • Book: Aankhen(rekhta website) (Pg. 184)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites