وہ

MORE BY جون ایلیا

    وہ کتاب حسن وہ علم و ادب کی طالبہ

    وہ مہذب وہ مؤدب وہ مقدس راہبہ

    کس قدر پیرایہ پرور اور کتنی سادہ کار

    کس قدر سنجیدہ و خاموش کتنی با وقار

    گیسوئے پر خم سواد دوش تک پہنچے ہوئے

    اور کچھ بکھرے ہوئے الجھے ہوئے سمٹے ہوئے

    رنگ میں اس کے عذاب خیرگی شامل نہیں

    کیف احساسات کی افسردگی شامل نہیں

    وہ مرے آتے ہی اس کی نکتہ پرور خامشی

    جیسے کوئی حور بن جائے یکایک فلسفی

    مجھ پہ کیا خود اپنی فطرت پر بھی وہ کھلتی نہیں

    ایسی پر اسرار لڑکی میں نے دیکھی ہی نہیں

    دختران شہر کی ہوتی ہے جب محفل کہیں

    وہ تعارف کے لیے آگے کبھی بڑھتی نہیں

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    وہ نعمان شوق

    Tagged Under

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY