Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

شفق

MORE BYساغر نظامی

    ہو گئی شام اور سورج ڈوبا

    پچھم میں ہے آگ کا گولا

    رنگ شفق سے ایسا برسا

    سرخ ہوئے جنگل اور دریا

    رنگ ترا ہے شام کا دامن

    پھول بنا ہے شام کا دامن

    واہ شفق کیا رنگ بھری ہے

    سرخ پری ہے سرخ پری ہے

    شام کی گودی میں بیٹھی ہے

    لال چندریا اوڑھ رہی ہے

    اس کو اپنے پاس بلا لوں

    اپنی سہیلی اس کو بنا لوں

    آ میری رنگین شفق آ

    آ جا میری گود میں آ جا

    رنگ ترا ہے کتنا پیارا

    جیسے ہو اماں کا دوپٹہ

    اے ملکہ اے شام کی بیٹی

    رنگوں کی تو ہے شہزادی

    ٹب میں پانی خوب بھرا ہے

    ابا نے یہ بھروایا ہے

    اس میں تیرا رتھ اترا ہے

    چاند ترا رتھ کھینچ رہا ہے

    روک لے رتھ کو اور اتر آ

    آج سہیلی میری بن جا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے