شکست توبہ

جگر مراد آبادی

شکست توبہ

جگر مراد آبادی

MORE BY جگر مراد آبادی

    ساقی کی ہر نگاہ پہ بل کھا کے پی گیا

    لہروں سے کھیلتا ہوا لہرا کے پی گیا

    بے کیفیوں کے کیف سے گھبرا کے پی گیا

    توبہ کو توڑ تاڑ کے تھرا کے پی گیا

    زاہد! یہ تیری شوخئ رندانہ دیکھنا

    رحمت کو باتوں باتوں میں بہلا کے پی گیا

    سر مستئ ازل مجھے جب یاد آ گئی

    دنیائے اعتبار کو ٹھکرا کے پی گیا

    آزردگئ خاطر ساقی کو دیکھ کر

    مجھ کو یہ شرم آئی کہ شرما کے پی گیا

    اے رحمت تمام مری ہر خطا معاف

    میں انتہائے شوق میں گھبرا کے پی گیا

    پیتا بغیر اذن یہ کب تھی مری مجال

    در پردہ چشم یار کی شہ پا کے پی گیا

    اس جان مے کدہ کی قسم بارہا جگرؔ

    کل عالم بسیط پہ میں چھا کے پی گیا

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    نامعلوم

    نامعلوم

    مآخذ:

    • Book : Kulliyat-e-jigar (Pg. 411)
    • Author : Jigar Muradabadi
    • مطبع : Educational Publishing House (2011)
    • اشاعت : 2011

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY