شرکت محفل

نظم طبا طبائی

شرکت محفل

نظم طبا طبائی

MORE BYنظم طبا طبائی

    تو ہمیشہ رہتا ہے چیں بر جبیں افسردہ دل

    پھر کسی کی بزم عشرت میں نہ جا بہر خدا

    خود ہی اپنی جان سے بے زار تو انصاف کر

    تجھ سے اہل بزم پھر کس طرح خوش ہوں گے بھلا

    چاہیئے اس طرح جانا محفل احباب میں

    باغ میں جس طرح خوش خوش آتی ہے باد صبا

    خیر مقدم کا اشارہ جھوم کر کرتی ہے شاخ

    اور چٹک کر دیتی ہیں کلیاں صدائے مرحبا

    جس شجر کے پاس سے گزرے لگا وہ جھومنے

    پہنچے جس غنچے تک افسردہ تھا وہ ہنسنے لگا

    دل پہ جو گزرے وہ گزرے کیوں کسی کو ہو خبر

    سب سے بڑھ کر ہے خدا تو حال دل کا جانتا

    شادی و غم جب کہ دونوں ہیں جہاں میں بے ثبات

    وقت اپنا کاٹ دے ہنس بول کر بہر خدا

    مآخذ:

    • کتاب : Jadeed Shora.e Urdu (Pg. 120)
    • Author : Dr. Abdul Vaheed
    • مطبع : Firoz sons Printers Publishers Book sales

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY