سنو

MORE BYادا جعفری

    جان

    تم کو خبر تک نہیں

    لوگ اکثر برا مانتے ہیں

    کہ میری کہانی کسی موڑ پر بھی

    اندھیری گلی سے گزرتی نہیں

    کہ تم نے شعاعوں سے ہر رنگ لے کر

    مرے ہر نشان قدم کو دھنک سونپ دی

    نہ گم گشتہ خوابوں کی پرچھائیاں ہیں

    نہ بے آس لمحوں کی سرگوشیاں ہیں

    کہ نازک ہری بیل کو

    اک توانا شجر ان گنت اپنے ہاتھوں میں

    تھامے ہوئے ہے

    کوئی نارسائی کا آسیب اس رہ گزر میں نہیں

    یہ کیسا سفر ہے کہ روداد جس کی

    غبار سفر میں نہیں

    RECITATIONS

    عذرا نقوی

    عذرا نقوی

    عذرا نقوی

    سنو عذرا نقوی

    مأخذ :
    • کتاب : Muntakhab Shahkar Nazmon Ka Album) (Pg. 257)
    • Author : Munavvar Jameel
    • مطبع : Haji Haneef Printer Lahore (2000)
    • اشاعت : 2000

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY