Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

تأثرات

نصیر پرواز

تأثرات

نصیر پرواز

MORE BYنصیر پرواز

    دلچسپ معلومات

    سانیٹ

    تجھ سے ملتا ہوں تو احباب ستم ڈھاتے ہیں

    ان کی خواہش ہے کہ ملنے سے بھی مجبور رہوں

    تجھے پوجوں یوں ہی خاموش پجاری بن کر

    دل سے نزدیک نگاہوں سے مگر دور رہوں

    بھول جاؤں تری خوشبو تری قربت ترا لمس

    سوز ہجراں سے فسردہ رہوں رنجور رہوں

    چاندنی رات جہاں جسم کو جھلسانے لگے

    پرتو حسن خیالات سے معمور رہوں

    میری تقدیر بھی راتوں کے اندھیرے پہنے

    یوں ہی تڑپا کروں جلتا رہوں بے نور رہوں

    اور خود میری وفا کا بھی تقاضہ ہے یہی

    اشک غم پی کے بھی شاداں رہوں مسرور رہوں

    مجھ کو یہ غم بھی گوارا ہے مگر روح خیال

    تیرے ہونٹوں پہ تبسم کی کرن چاہتا ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے