تم بالکل ہم جیسے نکلے

فہمیدہ ریاض

تم بالکل ہم جیسے نکلے

فہمیدہ ریاض

MORE BYفہمیدہ ریاض

    دلچسپ معلومات

    فہمیدہ ریاض کی مشہور نظم ہندوستانی پارلیامنٹ میں پڑھی گئی. یہ نظم بہت حد تک دونوں ملک میں موجود راسخ العقیدگی کی قلعی کھولتی ہے ۔

    تم بالکل ہم جیسے نکلے

    اب تک کہاں چھپے تھے بھائی

    وہ مورکھتا وہ گھامڑ پن

    جس میں ہم نے صدی گنوائی

    آخر پہنچی دوار توہارے

    ارے بدھائی بہت بدھائی

    پریت دھرم کا ناچ رہا ہے

    قائم ہندو راج کرو گے

    سارے الٹے کاج کرو گے

    اپنا چمن تاراج کرو گے

    تم بھی بیٹھے کرو گے سوچا

    پوری ہے ویسی تیاری

    کون ہے ہندو کون نہیں ہے

    تم بھی کرو گے فتویٰ جاری

    ہوگا کٹھن یہاں بھی جینا

    دانتوں آ جائے گا پسینا

    جیسی تیسی کٹا کرے گی

    یہاں بھی سب کی سانس گھٹے گی

    بھاڑ میں جائے شکشا وکشا

    اب جاہل پن کے گن گانا

    آگے گڑھا ہے یہ مت دیکھو

    واپس لاؤ گیا زمانہ

    مشق کرو تم آ جائے گا

    الٹے پاؤں چلتے جانا

    دھیان نہ دوجا من میں آئے

    بس پیچھے ہی نظر جمانا

    ایک جاپ سا کرتے جاؤ

    بارم بار یہی دہراؤ

    کیسا ویر مہان تھا بھارت

    کتنا عالی شان تھا بھارت

    پھر تم لوگ پہنچ جاؤ گے

    بس پرلوک پہنچ جاؤ گے

    ہم تو ہیں پہلے سے وہاں پر

    تم بھی سمے نکالتے رہنا

    اب جس نرک میں جاؤ وہاں سے

    چٹھی وٹھی ڈالتے رہنا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY