وجود اپنا مجھے دے دو

عبید اللہ علیم

وجود اپنا مجھے دے دو

عبید اللہ علیم

MORE BYعبید اللہ علیم

    تمہارے ہیں کہو اک دن

    کہو اک دن

    کہ جو کچھ بھی ہمارے پاس ہے سب کچھ تمہارا ہے

    کہو اک دن

    جسے تم چاند سا کہتے ہو وہ چہرہ تمہارا تھا

    ستارہ سی جنہیں کہتے ہو وہ آنکھیں تمہاری ہیں

    جنہیں تم شاخ سی کہتے ہو وہ بانہیں تمہاری ہیں

    کبوتر تولتے ہیں پر تو پروازیں تمہاری ہیں

    جنہیں تم پھول سی کہتے ہو وہ باتیں تمہاری ہیں

    قیامت سی جنہیں کہتے ہو رفتاریں تمہاری ہیں

    کہو اک دن

    کہو اک دن

    کہ جو کچھ بھی ہمارے پاس ہے سب کچھ تمہارا ہے

    اگر سب کچھ یہ میرا ہے تو سب کچھ بخش دو اک دن

    وجود اپنا مجھے دے دو محبت بخش دو اک دن

    مرے ہونٹوں پہ اپنے ہونٹ رکھ کر روح میری کھینچ لو اک دن

    مآخذ:

    • کتاب : Muntakhab Shahkar Nazmon Ka Album) (Pg. 406)
    • Author : Munavvar Jameel
    • مطبع : Haji Haneef Printer Lahore (2000)
    • اشاعت : 2000

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY