وطن کا راگ

افسر میرٹھی

وطن کا راگ

افسر میرٹھی

MORE BYافسر میرٹھی

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    ہر رت ہر اک موسم اس کا کیسا پیارا پیارا ہے

    کیسا سہانا کیسا سندر پیارا دیس ہمارا ہے

    دکھ میں سکھ میں ہر حالت میں بھارت دل کا سہارا ہے

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    سارے جگ کے پہاڑوں میں بے مثل پہاڑ ہمالہ ہے

    پربت سب سے اونچا ہے یہ پربت سب سے نرالا ہے

    بھارت کی رکھشا کرتا ہے بھارت کا رکھوالا ہے

    لاکھوں چشمے بہتے ہیں اس میں لاکھوں ندیوں والا ہے

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    گنگا جی کی پیاری لہریں گیت سناتی جاتی ہیں

    صدیوں کی تہذیب ہماری یاد دلاتی جاتی ہیں

    بھارت کی گلزاروں کو سرسبز بناتی جاتی ہیں

    کھیتوں کو ہریالی دیتی پھول کھلاتی جاتی ہیں

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    ہرے بھرے ہیں کھیت ہمارے دنیا کو ان دیتے ہیں

    چاندی سونے کی کانوں سے ہم جگ کو دھن دیتے ہیں

    پریم کے پیارے پھول کی خوشبو گلشن گلشن دیتے ہیں

    امن و اماں کی نعمت سب کو بھر بھر دامن دیتے ہیں

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    کرشنؔ کی بنسی نے پھونکی ہے روح ہماری جانوں میں

    گوتمؔ کی آواز بسی ہے محلوں میں میدانوں میں

    چشتیؔ نے جو دی تھی مے وہ اب تک ہے پیمانوں میں

    نانکؔ کی تعلیم ابھی تک گونج رہی ہے کانوں میں

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    مذہب کچھ ہو ہندی ہیں ہم سارے بھائی بھائی ہیں

    ہندو ہیں یا مسلم ہیں یا سکھ ہیں یا عیسائی ہیں

    پریم نے سب کو ایک کیا ہے پریم کے ہم شیدائی ہیں

    بھارت نام کے عاشق ہیں ہم بھارت کے سودائی ہیں

    بھارت پیارا دیش ہمارا سب دیشوں سے نیارا ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    مآخذ:

    • کتاب : Azadi Ki Nazmein (Pg. 59)
    • Author : Sibte Hasan
    • مطبع : National Council For Promotion Of Urdu Language (1985,2007)
    • اشاعت : 1985,2007

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY