Aks samastipuri's Photo'

عکس سمستی پوری

1996 | سمستی پور, ہندوستان

عکس سمستی پوری کے اشعار

یار میں اتنا بھوکا ہوں

دھوکا بھی کھا لیتا ہوں

ایک رشتہ جسے میں دے نہ سکا کوئی نام

ایک رشتہ جسے تا عمر نبھائے رکھا

بس اسی امید پہ ہوتا گیا برباد میں

گر کبھی بکھرا تو آ کر تو سنبھالے گا مجھے

اس نے یوں راستہ دیا مجھ کو

راستے سے ہٹا دیا مجھ کو

تو صرف میری ہے اس کا غرور ہے مجھ کو

اگر یہ وہم میرا ہے تو کوئی بات نہیں

کیسے تم بھول گئے ہو مجھے آسانی سے

عشق میں کچھ بھی تو آسان نہیں ہوتا ہے

بک جاتا ہوں ہاتھوں ہاتھ

حد سے زیادہ سستا ہوں

جس ہوا نے مجھے جلائے رکھا

پھر اسی نے بجھا دیا مجھ کو

تھا مجھے وہم و گماں کی وہ فقط میری ہے

اور اس نے بھی بھرم میرا بنائے رکھا