غزل 6

اشعار 5

جب وفا ہی نہیں زمانے میں

عشق سر پر سوار کون کرے

کبھی مندر کبھی مسجد پہ ہے اس کا بسیرا

دھرم انسانیت کا بس کبوتر جانتا ہے

دیر تک ساتھ بھیگے ہم اس کے

ہم نے یوں کامیاب کی بارش

یوں تو سفر کیا ہے کتنے ہی راستوں پر

لیکن ترے ہی گھر کا رستہ پسند آیا

کبھی ملو گے یہ سوچ کر دل

ہزار سپنے بنا کرے گا

"سہارن پور" کے مزید شعرا

  • آثم پیرزادہ آثم پیرزادہ
  • نواز دیوبندی نواز دیوبندی
  • انور تاباں انور تاباں
  • عامر عثمانی عامر عثمانی
  • جوہر دیوبندی جوہر دیوبندی
  • قمر عثمانی قمر عثمانی
  • نامی نادری نامی نادری
  • بلال سہارن پوری بلال سہارن پوری
  • نیر قریشی گنگوہی نیر قریشی گنگوہی
  • حمزہ بلال حمزہ بلال