noImage

خالد حسن قادری

- 2012 | لندن, برطانیہ

وفات : 12 Jan 2012 | لندن, برطانیہ

Relatives : حامد حسن قادری (بیٹا)

ڈاکٹر خالد حسن قادری کے والد گرامی مولانا حامد حسن قادری اردو کے نامور مورخ، ادیب و نقاد تھے۔ وہ 25 مارچ 1887 کو مراد آباد میں پیدا ہوئے۔ 1955 میں مولانا حامد کراچی منتقل ہوئے۔ ساٹھ برس تک اردو کی خدمت کرنے والے مولانا حامد حسن قادری 6 جون 1964 کو اللہ کو پیارے ہوئے۔ آپ کی تدفین پاپوش نگر کراچی کے قبرستان میں ہوئی۔ مولانا حامد حسن قادری کے فرزند ڈاکٹر خالد حسن قادری نے اپنے والد محترم کی کئی خصوصیات ورثے میں پائیں۔ بنیادی طور پر وہ ایک محقق تھے۔ شاعری سے شغف تھا، ان کا یہ شعر ملاحظہ ہو:        
                 
آدمی ہیں چند دن میں مر رہیں گے دیکھنا
                  ہم ہزاروں سال دنیا میں رہیں پتھر نہیں 

ڈاکٹر خالد حسن قادری تحقیق کے آدمی تھے، ان کا ایک دلچسپ مضمون "مرنے کی اپنے روز اڑائی خبر غلط" ہے جو گزشتہ صدی کی دوسری  دہائی میں نوجوان ذوالفقار علی بخاری (زیڈ اے بخاری) کی شاعری سے متعلق ہے۔ ڈاکٹر خالد حسن قادری نے رسالہ پیشوا دہلی کے 24 فروری 1927میں پہلے صفحے پر درج زیڈ اے بخاری کی نظم ‘میرا آقا سب سے اچھا‘  کے چند اشعار نقل کیے ہیں، اس ضمن میں وہ لکھتے ہیں:

نظم کا عنوان ہے "میرا آقا سب سے اچھا"، لطف کی بات یہ ہے کہ عنوان کے نیچے لکھا ہے اثر خامہ ترجمان جذبات جناب مولانا سید ذوالفقار علی صاحب بخاری بے ریش و بروت سوٹ اور ٹائی اور منہ میں ٹیڑھا پائپ شرلاک ہومز کے مشابہہ نوجوان کو مولانا لکھنا خاصہ دلچسپ پے۔"
 
خالد حسن قادری 12 جنوری 2012 کو لندن میں انتقال کرگئے۔