noImage

خواجہ حسن حسنؔ

اشعار 4

وقت نظارہ نہ رو کہتے تھے اے چشم تجھے

شدت گریہ سے لے خاک نہ سوجھا، دیکھا

  • شیئر کیجیے

رہی بے قراری اسیری کی یوں ہی

تو صیاد ٹکڑے ترا دام ہوگا

  • شیئر کیجیے

وہ جب تک کہ زلفیں سنوارا کیا

کھڑا اس پہ میں جان وارا کیا

  • شیئر کیجیے